Play Copy

ﭺﭻﭼﭽﭾﭿﮀﮁﮂﮃﮄﮅﮆﮇﮈﮉﮊﮋﮌﮍﮎﮏﮐﮑﮒﮓﮔ

52. اس کے بعد (کہ انہوں نے دنیوی منفعتوں پر آپ کی رضا و خدمت کو ترجیح دے دی ہے) آپ کے لئے بھی اور عورتیں (نکاح میں لینا) حلال نہیں (تاکہ یہی اَزواج اپنے شرف میں ممتاز رہیں) اور یہ بھی جائز نہیں کہ (بعض کی طلاق کی صورت میں اس عدد کو ہمارا حکم سمجھ کر برقرار رکھنے کے لئے) آپ ان کے بدلے دیگر اَزواج (عقد میں) لے لیں اگرچہ آپ کو ان کا حُسنِ (سیرت و اخلاق اور اشاعتِ دین کا سلیقہ) کتنا ہی عمدہ لگے مگر جو کنیز (ہمارے حکم سے) آپ کی مِلک میں ہو (جائز ہے)، اور اللہ ہر چیز پر نگہبان ہےo

52. After that (they have preferred your pleasure and your service to the worldly benefits), it is not lawful for you also (to marry) more women (so that these wives alone may enjoy the distinction of their glory). Nor is it lawful that (in case of divorce to some and regarding it Our command to maintain the present number of wives) you take (into marriage) other wives in their place, even though their beauty (of behaviour, moral conduct and style of preaching Din [Religion]) may seem to you pleasingly excellent. But the slave girl that is in your possession (by Our command is lawful). And Allah is Ever-Watchful over everything.

(الْأَحْزَاب، 33 : 52)