Play Copy

ﭮﭯﭰﭱﭲﭳﭴﭵﭶﭷﭸﭹﭺﭻﭼﭽﭾﭿﮀﮁﮂﮃﮄﮅﮆﮇﮈﮉﮊﮋﮌﮍﮎﮏﮐﮑﮒﮓﮔﮕﮖﮗﮘﮙﮚﮛﮜﮝﮞﮟﮠﮡﮢﮣﮤﮥﮦﮧﮨﮩﮪﮫﮬﮭﮮ

217. لوگ آپ سے حرمت والے مہینے میں جنگ کا حکم دریافت کرتے ہیں، فرما دیں: اس میں جنگ بڑا گناہ ہے اور اﷲ کی راہ سے روکنا اور اس سے کفر کرنا اور مسجدِ حرام (خانہ کعبہ) سے روکنا اور وہاں کے رہنے والوں کو وہاں سے نکالنا اﷲ کے نزدیک (اس سے بھی) بڑا گناہ ہے، اور یہ فتنہ انگیزی قتل و خون سے بھی بڑھ کر ہے اور (یہ کافر) تم سے ہمیشہ جنگ جاری رکھیں گے یہاں تک کہ تمہیں تمہارے دین سے پھیر دیں اگر (وہ اتنی) طاقت پاسکیں، اور تم میں سے جو شخص اپنے دین سے پھر جائے اور پھر وہ کافر ہی مرے تو ایسے لوگوں کے دنیا و آخرت میں (سب) اعمال برباد ہو جائیں گے، اور یہی لوگ جہنمی ہیں وہ اس میں ہمیشہ رہیں گےo

217. They ask you about the command for fighting in the Sacred Month. Say: ‘Fighting in it is a grave sin, but hindering people from Allah’s path and denying Him and obstructing them from al-Masjid al-Haram (Ka‘ba) and turning its dwellers out of it is yet a graver sin (than that) in the sight of Allah.’ And this mischief-mongering is even worse than bloodshed. (These disbelievers) will continue fighting against you endlessly till they turn you back from your Din (Religion) if they become capable to gain (the required) might. And whoever of you turns away from his Din (Religion) and dies as a disbeliever, (all) deeds of such people will become void in this world and in the Hereafter. And it is they who are the inmates of Hell. They shall dwell in it forever.

(الْبَقَرَة، 2 : 217)