Play Copy

ﯞﯟﯠﯡﯢﯣﯤﯥﯦﯧﯨﯩﯪﯫﯬﯭﯮﯯﯰﯱﯲﯳﯴﯵﯶﯷﯸﯹﯺﯻﯼﯽﯾﯿﰀﰁﰂﰃﰄ

237. اور اگر تم نے انہیں چھونے سے پہلے طلاق دے دی درآنحالیکہ تم ان کا مَہر مقرر کر چکے تھے تو اس مَہر کا جو تم نے مقرر کیا تھا نصف دینا ضروری ہے سوائے اس کے کہ وہ (اپنا حق) خود معاف کر دیں یا وہ (شوہر) جس کے ہاتھ میں نکاح کی گرہ ہے معاف کردے (یعنی بجائے نصف کے زیادہ یا پورا ادا کردے)، اور (اے مَردو!) اگر تم معاف کر دو تو یہ تقویٰ کے قریب تر ہے، اور (کشیدگی کے ان لمحات میں بھی) آپس میں احسان کرنا نہ بھولا کرو، بیشک اﷲ تمہارے اعمال کو خوب دیکھنے والا ہےo

237. And if you divorce them before you have touched them, after you have fixed a dower for them, then paying half of the dower you have fixed is necessary, unless they forgo (their right) themselves, or (the husband) in whose hand is the marriage tie forgoes (i.e., pays more than half or full). And, (O male folk,) if you forgo, that is closer to Godwariness. And never forget extending generosity (and behaving excellently) towards each other (even in these moments of stress and strain). Verily, Allah observes well what you do.

(الْبَقَرَة، 2 : 237)