Play Copy

ﭤﭥﭦﭧﭨﭩﭪﭫﭬﭭﭮﭯﭰﭱﭲﭳﭴﭵﭶﭷﭸﭹﭺﭻﭼﭽﭾﭿﮀﮁﮂﮃﮄﮅﮆﮇﮈﮉﮊﮋﮌﮍﮎﮏﮐﮑﮒﮓﮔﮕﮖﮗﮘﮙﮚﮛﮜﮝﮞﮟﮠﮡﮢﮣﮤﮥﮦﮧﮨ

110. جب اللہ فرمائے گا: اے عیسٰی ابن مریم! تم اپنے اوپر اور اپنی والدہ پر میرا احسان یاد کرو جب میں نے پاک روح (جبرائیل) کے ذریعے تمہیں تقویت بخشی، تم گہوارے میں (بعہدِ طفولیت) اور پختہ عمری میں (بعہدِ تبلیغ و رسالت یکساں انداز سے) لوگوں سے گفتگو کرتے تھے، اور جب میں نے تمہیں کتاب اور حکمت (و دانائی) اور تورات اور انجیل سکھائی، اور جب تم میرے حکم سے مٹی کے گارے سے پرندے کی شکل کی مانند (مورتی) بناتے تھے پھر تم اس میں پھونک مارتے تھے تو وہ (مورتی) میرے حکم سے پرندہ بن جاتی تھی، اور جب تم مادر زاد اندھوں اور کوڑھیوں (یعنی برص زدہ مریضوں) کو میرے حکم سے اچھا کر دیتے تھے، اور جب تم میرے حکم سے مُردوں کو (زندہ کر کے قبر سے) نکال (کھڑا کر) دیتے تھے، اور جب میں نے بنی اسرائیل کو تمہارے (قتل) سے روک دیا تھا جب کہ تم ان کے پاس واضح نشانیاں لے کر آئے تو ان میں سے کافروں نے (یہ) کہہ دیا کہ یہ تو کھلے جادو کے سوا کچھ نہیںo

110. When Allah will say: ‘O ‘Isa, the son of Maryam (Jesus, the son of Mary), call to mind My favour to you and your mother when I provided you strength through the Holy Spirit (Gabriel); you conversed with the people (in a uniform style both) from the cradle (during early childhood) and in the ripe age (whilst preaching as a Messenger); and when I taught you the Book and wisdom (and insight) and the Torah and the Injil (the Gospel); and when by My command you made out of clay some (figure) looking like a bird, then you would breathe into it and by My command it would become a bird; and when you healed the blind and the leper (i.e., victims of leprosy) by My command; and when you raised up the dead (standing, bringing them back to life from the grave) by My command; and when I held back the Children of Israel from (killing) you whilst you brought them clear signs, those who disbelieved amongst them said: ‘This is nothing but sheer magic.’

(الْمَآئِدَة، 5 : 110)