Play Copy

ﯹﯺﯻﯼﯽﯾﯿﰀﰁﰂﰃﰄﰅﰆﰇﰈﰉﰊﰋﰌﰍﰎﰏﰐﰑﰒﰓﰔﰕ

102. پھر جب وہ (اسماعیل علیہ السلام) ان کے ساتھ دوڑ کر چل سکنے (کی عمر) کو پہنچ گیا تو (ابراہیم علیہ السلام نے) فرمایا: اے میرے بیٹے! میں خواب میں دیکھتا ہوں کہ میں تجھے ذبح کررہا ہوں سو غور کرو کہ تمہاری کیا رائے ہے۔ (اسماعیل علیہ السلام نے) کہا: ابّاجان! وہ کام (فوراً) کر ڈالیے جس کا آپ کو حکم دیا جا رہا ہے۔ اگر اﷲ نے چاہا تو آپ مجھے صبر کرنے والوں میں سے پائیں گےo

102. Then when (Isma‘il [Ishmael]) reached (the age of) the ability to run about with him, Ibrahim (Abraham) said: ‘O my son, I have seen in a dream that I am sacrificing you. So think, what is your opinion?’ Isma‘il (Ishmael) said: ‘O my father, do that (immediately) which you are being commanded. If Allah wills, you will find me amongst the patient (and steadfast).’

(الصَّافَّات، 37 : 102)